آئی ایم سوری ، شہباز بھٹی

آج میں شرمندہ ہوں ، اپنے سارے مسیحی دوستوں سے ، جو مجھے اپنا اتنا قریبی دوست سمجھتے ہیں کہ شاید کوئی اور سمجھتا ہو ، میں ان سے بحث کرتا رہا ہوں کہ پاکستان میں جو لڑائی ہے وہ مسلمانوں کے درمیان ہے اور ہم غیر مسلموں کو اپنے آپ سے زیادہ اہمیت دیتے ہیں ، میں جسٹس کارنیلسن سے لیکر انیل دلپت تک کی مثالیں دیتا کہ دیکھو جسٹس بھگوان داس کو ہم نے کس پوزیشن پر رکھا ہے ، اور میں انہیں بینجمن سسٹرز ، اے نئیر اور سلیم رضا جیسے گلوکار اور شبنم اور روبن جیسے فنکاروں کی مثالیں دیتا ہوں کہ جو ہمارے دلوں میں رہتے ہیں

میں جے سالک جیسے جنونی کو بھی جانتا ہوں میں بشپ آف پاکستان کو بھی پہچانتا ہوں ، شہباز تم بھی ایسے ہی لوگوں میں سے تھے جسے ہم پاکستانی جانتے ہیں کہ یہ ہمارا ہم وطن ہے ، ہم لاہور کی یوحنا بستی ہو یا کراچی کی عیسیٰ نگری ، وہ ملتان اور سہون کے جیسی ہی ہیں

پاکستان سب کا ہے ، وہ چاہے کسی بھی مذہب سے تعلق رکھتے ہوں ، ہمیں ہمارا اسلام سیکھاتا ہے کہ اقلیتوں کی حفاظت ہماری ذمہ داری ہے ، بلکہ خود سے بڑھکر انکی حفاظت کرنی ہے ، ان کی عبادت گاہیں اور مذہبی رہنما ، ہمارے لئے بھی محترم ہیں

مگر اب ایسا لگتا نہیں ہے ، کہ ایک مسیحی رہنما کو دن دھاڑے مار دیا گیا اور وہاں پر پمفلٹ پھینکے گئے کہ یہ ناموس رسالت (ص) کے لئے قتل کیا ہے ، کیا واقعٰی ہی ایسا ہے ؟؟؟؟

نہیں بالکل نہیں ، کیونکہ یہ قتل کرنے والے ناموس رسالت کیا جانیں ، انہیں تو اسم محمد(ص) کا احترام تک نہیں ، جسکو انہوں نے کیچڑ میں پھینک دیا ، یہ اسلام کیا جانیں ، جو آیات قرآنی کی بے حرمتی کریں ، ارے یہ تو انسان بھی نہیں کہ ایک بیٹے کو جو ماں سے ملکر آ رہا تھا اسے نہیں بخشا ۔ ۔ ۔۔ خدارا انہیں مسلمان مت کہیں بلکہ انسان بھی مت کہیں ، یہ درندے ہیں ، جنکے لئے انسا ن کی زندگی کی کوئی قدر نہیں ، یہ اسلام کے نام کو نہیں جانتے کہ جس کا مطلب ہی امن و سلامتی ہے

مگر ہاں شہباز بھٹی میں تم سے شرمندہ ہوں ، کہ میں نے ایسے حاکم منتخب کئے ہیں جو چوہوں کی طرح بِل میں چھُپے ہیں کہ انہیں موت نہیں آئے گی ، یہ خود تو بُلٹ پروف کاروں میں گھومتے ہیں اور باقی سب کو مرنے کے لئے درندوں کے حوالے کر دیا ہے ، انکے پاس ہر سوال کا ایک ہی جواب ہے کہ دھشت گرد یہ سب کر رہے ہیں ، جب کہ سب سے بڑے دھشت گرد یہ خود ہیں ، کہ جن کی دھشت سے ساری عوام کانپ رہی ہے ، یہ کبھی پٹرول بم گراتے ہیں ، کبھی آٹے اورگھی کی قیمتوں کے اضافے کے مزائیل چلاتے ہیں ، اور کبھی گیس اور بجلی کے بلوں سے ہمیں جلا دیتے ہیں ، اور کبھی چینی کے عزاب نازل کرتے ہیں ، یہ سب فرعون ہیں ۔ ۔ ۔ کافر ہیں ۔ ۔ ۔ مُرتد ہیں ۔ ۔ ۔ اور سب سے بڑھکر یہ ان سب دھشت گردوں کے رکھوالے ہیں ۔ ۔ ۔

آئی ایم سوری ، شہباز بھٹی ، کہ میرے دیس کے رکھوالے ، تمہاری رکھوالی نہیں کر پائے
آئی ایم سوری ، شہباز بھٹی ، کہ چند جنونیوں نے تمہیں مار ڈالا ، مگر یقین کرو وہ ہم میں سے نہیں ہیں
آئی ایم سوری ، شہباز بھٹی ، تم دن دھاڑے ایک ایسے علاقے میں مارے گئے جسکے ہر گھر میں گاڑی ہے مگر وہ بزدل قاتلوں کی گاڑی کا پچھا بھی نہ کر سکے ،
آئی ایم سوری ، شہباز بھٹی ، کہ ہم بھی کچھ دنوں میں تمہیں ویسے ہی بھول جائیں گے جیسے اپنے ہزاروں ہموطنوں کے قتل کو بھول چکے ہیں ۔ ۔ ۔
آئی ایم سوری ، شہباز بھٹی ، تم کو الزام دیتے ہیں کہ تم نے خود ہی سیکیورٹی نہیں لی ، مگر ہم سب عوام تم جیسے ہی ہیں کہ جنکی حفاظت کے لئے معمور سپاہی آج صرف انکی حفاظت کر رہے ہیں ، کہ جن سے اس ملک کو سب سے زیادہ خطرہ ہے
آئی ایم سوری ۔ ۔ ۔ ۔ ۔۔ شہباز بھٹی ، تم سے ہی نہیں بلکہ اپنے تمام اقلیتی ہم وطنوں سے کہ جنہیں ہم وہ تحفظ نہ دے سکے جو ہمیں دینا چاہیے ، مگر کیا کریں ہم کہ مجھے تو تم جیسا بھی تحفظ حاصل نہیں

میں اگر بلوچستان میں ہوں تو مجھے بی این اے مارتی ہے
میں اگر سندھ میں ہوں تو مجھے ٹارگٹ کلر مارتے ہیں
میں اگر سرحد میں ہوں تو مجھے دھشت گرد مارتے ہیں
میں اگر پنجاب میں ہوں تو مجھے طالبان مارتے ہیں
اور اگر میں دارلحکومت میں ہوں تو مجھے کبھی مذھبی جنونی مارتے ہیں تو کبھی روشن خیال
میں پاکستان کے کسی بھی کونے میں جاؤں تو مجھے مہنگائی مارتی ہے ، گیس بجلی اور پانی بھی مارتے ہیں
میں بھوک سے مرتا ہوں میں سیلاب سے مرتا ہوں اور اگر ان سے بچ بھی جاؤں تو سیاست دانوں کی حماقتوں سے مر جاتا ہوں

آئی ایم سوری ، شہباز بھٹی ۔ ۔ ۔ ہم تمہارے قاتل ہیں ، کیونکہ ہم خود اپنے بھی قاتل ہیں ۔ ۔ ۔۔

Advertisements

6 responses to this post.

  1. wo kon hoota he he namoose rasaalt k kais ka zima lene wala jo b ayg is kais me kaat don gi.ali

    جواب دیں

  2. tum bi apna khyaal kro ab se mister sory shahbaz bhati daikh lon gi tje b

    جواب دیں

  3. شکریہ عائشہ میری تحریر کی تصدیق کرنے کے لئے
    میرا اللہ ہی میرا حافظ ہے
    اور نبی (ص) سے میرا تعلق میری پچھلی تحریروں میں نظر آئے گا
    کاش ہم اب بھی سنبھل سکیں

    جواب دیں

  4. شہباز بھٹی کا قتل جب ھوا جب ریمنڈڈیوس کا کیس عروج پر ھے اور ھم یہ نہ بھولیں ریمنڈ ڈیوس امریکہ کا آدمی ھے بعض دفعہ مخالف وہ چال چل جاتا ھے جس کا وہم و گمان نہیں ھوتا “

    اور پھر اس کے ساتھ ہی پنجابی طالبان کی رٹ ، جو الطاف حسین اور پرویز مشرف کے بعد اب تواتر سے رحمٰن ملک کی زبان پہ آچکی ہے ، آخر کس بات کی طرف اشارہ کرتی ہے ؟ پہلی بات تو یہی کہ یہ کوئی طالبان ہیں ہی نہیں اور پھر یہ پنجابی ، سندھی یا بلوچی طالبان جیسی اصطلاحات کا مطلب کیا ؟ یہ کام مذہبی جنونیوں کا ہے یا ریمنڈ ڈیوس کے ہی ہمراز بلیک واٹر کے کارندوں کا ، اس سازش کا کھوج لگانا حکومت بالخصوص وزیرِ داخلہ ، کا کام ہے اور وزیرِ داخلہ نے اگر کسی ثبوت کے مدنظر یہ الزام لگایا ہے تو تمام حقائق کو بھی عوام کے سامنے پیش کیا جانا چاہیئے ، ورنہ :

    اس رزق سے موت اچھی ، جس رزق سے آتی ہو پرواز میں کوتاہی

    لیکن یہاں تو سب کرگس ہی بیٹھے ہیں جو ہماری لاشیں نوچ رہے ہیں ، شہباز کو تو ہم سے چھین لیا گیا ہے ۔

    ہم سوگ کی اس گھڑی میں تمام مسیحی برادری ، بالخصوص شہباز مرحوم کی تمام فیملی ، کے دکھ میں برابر کے شریک ہیں

    جواب دیں

  5. میں ا ظہر الحق کے الفاظ میں کچھ تبدیلی کر کے کہوں گی وی آر سوری شہباز بھٹی ،ہم تمام محب وطن پاکستانی تمھارے قتل پر شرمسار و نادم ہیں ، لیکن ہم بہت مجبور ہیں کیونکہ ہماری حکو مت نے اپنے اقتدار کی مسند کو مضبو ط رکھنے کے لئے اور تاج شاہی اپنی نسلوں کو منتقل کرنے کے لئے قاتلوں کی پوری کھیپ خوشی خوشی درآ مد کی ہے ،اور صرف تمھارے نہیں ہم سب پاکستانیوں کے سروں کا سودا کر کے قتل عام کا کھلا لائسنس بھی ان کو عطا کیا ہے ،

    دنیا کی تاریخ دیکھ لو تاج شاہی کی قیمت یہی ہوتی ہے ،پاکستان کی حالیہ تاریخ دیکھ لو ہر ،ہر حاکم وقت ہماری قوم کے لوگوں کو اپنے تاج و تخت کی بقائے دائمی کے عو ض سامرا جی درندوں کے ہاتھ فروخت کر رہا ہے اور پورے پاکستان میں مختلف ناموں سے ہم کو قتل کروا رہا ہے

    تو آؤ ہم اپنے مقتولوں کے ساتھ، ساتھ تمھارا پرسہ دینے تمھار ی دہلیز پر دید ہء پرنم سے آئے ہیں

    آ عندلیب کریں مل کے کریں آہ و زاریا ں

    جواب دیں

  6. یہاں بسنے والے تمام مسیحی پاکستانی ھیں تو یہ سوچنا چاھیے کہ ایک اقلیتی مسیحی برادری کے فرد کا قتل نہیں ھوا بلکہ ایک سچے اور مخلص پاکستانی کا قتل ھوا ھے جیسے پاکستان میں ھر مسلک کے لوگ دہشت گردی کا نشانہ بنتے ھیں بس ضرورت اس بات کی ھے کہ یہ سمجھا جائے کہ اس واقعے سے فائدہ کون اٹھائے گا

    جواب دیں

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: