شکر ہے خدایا تیرا

اے خدا تیرا جتنا شکر کیا جائے کم ہے ،کہ میرے پاکستان میں جو کچھ بھی ہو رہا ہے اس سے متاثر صرف عام لوگ ہو رہے ہیں
 
 
اللہ تیرا کرم ہے کہ ہمارے خواص جن میں ہمارے صدر سے لیکر عام وزیر مشیر تک ہیں،  محفوظ ہیں
 
 
اللہ تیرا کتنا شکر ادا کروں کم ہے کہ میرے امراء کو کسی چیز کی کمی نہیں ، وہ اسی پاکستان میں جہاں لوگ آٹے اور روٹی کے لئے بھٹکتے پھر رہے ہیں ، میکڈونالڈ اور کے ایف سی جیسے بین الاقوامی ذائقوں سے مستفیض ہو رہے ہیں
 
 
اے اللہ  تو واقعٰی ہی رحیم و کریم ہے ، کہ میرے ملک کے افسران ائیر کنڈیشنڈ کمروں میں رہتے ہیں ، انہیں زمانے کی کسی گرم سرد کا کوئی اثر نہیں  ۔ ۔ ۔ 
 
 
اے اللہ تیرا کتنا کرم ہے ہماری افواج پر کہ وہ خود بھی شہید ہو رہے ہیں اور دوسروں کو بھی شہادت کے مرتبے پر فائض کرا رہے ہیں ، یقیناً اب جنت کی آبادی میں پاکستانیوں کی خاطر خواہ تعداد ہو گئی ہو گی اور ہو سکتا ہے وہاں پر بھی ایک پاکستان بن جائے جنتی پاکستان
 
 
اے میرے رب تو کتنا ہمارا خیال رکھ رہا ہے کہ مشرق سے مغرب تک ہمارے چرچے ہیں ، ہر لب پر ہماری ہی باتیں ہیں  ۔۔ ۔ کل تک جس پاکستان کو کوئی جانتا نہیں تھا امریکہ میں آج اسی پاکستان کی لاشوں پر امریکی الیکشن لڑنے کی تیاری کی جا رہی ہے  ۔ ۔ ۔
 
 
اے اللہ   ۔۔  ۔ تو نے ہم پاکستانیوں کو کتنا اتحاد دیا ہے ، کہ ہم کم سے کم ایک چیز پر تو متفق ہیں کہ ہمیں اپنی اپنی زندگی گذارنی ہے کسی کا ساتھ نہیں دینا اور کبھی ضرورت پڑے تو اپنے آپ کو بھی نہیں پہچاننا ۔ ۔ ۔
 
 
اے میرے عظیم رب  ۔ ۔ ۔ تیرا کتنا کرم ہے ہم پر  ۔ ۔ ۔ کہ ہمیں اس کی کوئئ پروہ نہیں کہ ہمارا کل کیسا ہو گا  ۔۔ ۔ تو نے ہمیں کل کی فکر سے آزاد کر دیا ہے  ۔ ۔  ۔
 
 
اے میرے پروردگار  ۔ ۔ ۔  شکر ہے تیرا کہ تو نے ہمیں اتنا بہادر بنا دیا ہے کہ اب ہمیں کسی کے مرنے پر کوئی دکھ نہیں ہوتا اور نہ ہی کوئی حادثہ ہمارے دلوں پر زیادہ دیر اثر رکھتا ہے  ۔  ۔ ۔
 
 
اے اللہ  ۔ ۔ ۔  تیرا لاکھ لاکھ شکر کہ تونے ہمیں اسلام کے قلعے میں پیدا کیا  ۔ ۔ ۔ ایک ایسا قلعہ جس کی دیواریں نہیں  ۔۔ ۔  جس کی حفاظت بس تو ہی کرتا ہے  ۔ ۔ ۔
 
 
کس کس کا شکر ادا کروں اے میرے رب  ۔ ۔ ۔ ۔ مگر کیا کروں کبھی کبھی  ۔ ۔ ۔ یہ بزدل لوگ   ۔۔ ۔ ۔ یہ ناسمجھ غریب  ۔ ۔ ۔ یہ جاہل پڑھے لکھے  ۔ ۔ ۔  تیری ان نوازشوں کو ہمارے عظیم رہنماؤں کی غلطیاں بتاتے ہیں  ۔ ۔ ۔
 
 
کیا ایک سید  ۔ ۔  یوسف رضا گیلانی  ۔ ۔  برا آدمی ہو سکتا ہے  ۔ ۔ ۔ جو اس ملک کا وزیر اعظم ہے
 
 
کیا ایک مظلوم شوہر  ۔ ۔ ۔ جسکی بیوی کو بھرے پرے ہجوم کے سامنے دن دھاڑے قتل کیا گیا ہو   ۔۔ ۔  وہ دکھوں کو نہیں سمجھ سکتا  ۔ ۔ ۔ وہ اس ملک کا صدر ہے  ۔ ۔ ۔
 
 
کیا  ۔ ۔ ۔ وہ شخص  ۔ ۔ ۔ جو دن رات  ۔ ۔ ۔ ملک کی عظیم قیادت کو بچانے میں لگا ہو  ۔ ۔ ۔  جھوٹا ہو سکتا ہے ؟  ۔۔۔  ۔ جو اس ملک کا وزیر داخلہ ہے  ۔ ۔ ۔
 
 
کیا  ۔ ۔ ۔ وہ شخص  ۔ ۔ ۔ جسنے برسوں “غیر ملک“ میں جلا وطنی کی زندگی گذاری  ۔ ۔ ۔  ہم وطنوں کے دکھ سے ناآشنا ہو گا  ۔ ۔  جو اس ملک کی دوسری بڑی پارٹی کا رہنما ہے  ۔ ۔ ۔
 
 
 
کس کس کی بات کروں کس کس کا نام لوں  ۔ ۔۔ ۔ انکے کارناموں کو کیسے بیان کروں  ۔ ۔ ۔
اے میرے اللہ تیرا کتنا کرم ہے ہم پر کہ ایسے نایاب گوہر ہمارے رہنما ہیں  ۔ ۔ ۔
میرا سر تو سجدے سے اٹھتا ہی نہیں  ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔
Advertisements

4 responses to this post.

  1. Posted by Mera Pakistan on اکتوبر 6, 2008 at 11:49 شام

    آپ کی دعا کا انداز پسند آیا۔ اللہ کرے آپ کی دعا ساتویں آسماں پر بلا روک ٹوک پہنچ جائے۔

    جواب دیں

  2. دعا جو دل سے نکلتی ہے اثر رکھتی ہےپر نہیں طاقتِ پرواز مگر رکھتی ہےآپ کا تخیل بہت آگے پروازیں کر رہا ہے اللہ مزید پرواز کی قوت دے۔

    جواب دیں

  3. محترم اظہرالحق
    آپ کی راے اور راہنمائی کا بیحد تشکر – اظہرالحق صاحب زندگی اور موت کے
    بارے میں علماء اور مغربی تحقیق کے سوا میرے لیے آپ کی راے بھی کافی اہمیت
    رکھتی ھے۔امید ھے آپ زندگی اور موت کے بارے میں اپنی راے بھی ضرور دیں گے۔
    غالب کاشعر جو آپ نے تحریر کیا ھے ۔۔۔۔۔ کہ
    جنت کی حقیقت بھی ہم جانتے ہیں
    دل بہلانے کو خیال بہت اچھا ہے ۔ ۔ ۔
    میرے خیال میں درست نہیں۔۔ یہ کچھ اسطرح سے ھے کہ:
    ھم کو معلوم ھے جنت کی حقیقت لیکن
    دل کے بہلانے کو غالب یہ خیال اچھا ہے

    جواب دیں

  4. Posted by ماوراء on اکتوبر 14, 2008 at 4:34 شام

    بہت اچھا لکھا ہے اظہر۔میری امی بھی آپ کی تحریر کی تعریف کر رہی ہیں۔ 🙂

    جواب دیں

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: