آزادی کی کہانی – آٹھویں قسط – مغلوں کا زوال

سولیں صدی کے آغاز میں اکبر کا انتقال ہوا اور جہانگیر تحت نشین ہوا ، جہانگیر کا زمانہ بہت اچھا گردانا جاتا ہے ، اسے عادل بادشاہ بھی کہا گیا، مگر اسکی ذات کبھی بھی شک سے خالی نہیں رہی ، یہاں تک کہ نور جہاں کے پہلے شوہر شیر افگن کے بارے میں بھی کہا جاتا ہے کہ اسے جہانگیر نے ہی قتل کروایا ، خیر ایک بات سمجھ میں نہیں آتا کہ نور جہاں نے انار کلی کی کہانی نہیں سنی تھی کیا ؟؟؟ ورنہ وہ جہانگیر سے شادی کیسے کرتی !!!
جہانگیر کے دور حکومت میں انگریزوں اور ڈچ نے اپنی اپنی فیکٹریاں لگائیں اور اپنی سازشوں کا گھیرا آہستہ آہستہ تنگ کرنا شروع کیا ۔ ۔  ۔ جسکی مثال سر تھامس رائے کی بحثیت سفیر تقرری تھی ہندوستان میں  ۔ ۔ ۔
جہانگیر کے بعد شاہ جہاں تحت نشین ہوا ، شاہ جہاں نے ہی تاج محل تعمیر کروایا جو اسکی محبوب بیوی ممتاز محل کی یاد میں تعمیر ہوا ، اسے تعمیرات کا جنون تھا ، لاہور اور دہلی کی مساجد ، قلعے اور ٹھٹھہ (سندہ) کی شاہ جہانی مسجد اسکی یادگاریں ہیں  ۔۔ ۔
شاہ جہاں کے دور میں ہی انگریزوں کو ایسی سہولیات دیں جس سے انہیں اپنے قدم جمانے میں آسانیاں ہوئیں جسکی مثال مدراس میں سینٹ جارج کا قلعہ تھا ، شاہ جہاں کے بعد اورنگزیب برسر اقتدار آیا اور اسنے شاہ جہاں کو قلعے میں قید کر دیا اور شاہ جہاں نے اپنی باقی زندگی تاج محل کو دیکھتے ہوئے گذاری  ۔ ۔ ۔
اورنگزیب کے دور میں مغل سلطنت انتشار کا شکار ہونا شروع ہوئی اور انگریزوں سے پہلی جنگ میں بیجاپور ہاتھوں سے نکل گیا  ۔ ۔ ۔ مگر ١٦٩٠ میں انگریزوں اور مغلوں کے درمیان ایک امن معاہدہ ہوا اور انگریزوں نے قدم جمانے کا وقت لے لیا  ۔ ۔ ۔
اور پھر اورنگزیب کی وفات کے بعد مغل سلطنت سوکھے پتوں کی طرح بکھرتی چلی گئی ایک کے بعد ایک بادشاہ آیا اور سازشوں کا دور شروع ہوا  ۔ ۔ ۔ اسی درمیان میں انگریزوں نے فرانسیسوں کو شکست دی اور ہندوستان پر اپنا جھنڈا گاڑھنے کے خواب دیکھنے لگے  ۔ ۔ ۔
(جاری ہے )
 
Advertisements

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: