اک نوح نہیں جو ہمیں کشتی پہ بٹھا لے

آج کافی دنوں کے بعد جب لکھنے بیٹھا تو بہت کچھ بدل چکا ہے ، کہاں سے شروع کروں کس موضوع پر لکھوں ، کچھ سمجھ نہیں آ رہا ، مگر اب سوچ رہا ہوں کہ مستقل لکھنے کی عادت ڈالوں ، بلاگر دوستوں کے ہاں یہ بحث بھی چل نکلی ہے کہ اردو بلاگنگ کو ترویج نہیں مل رہی ، مگر میرا خیال ہے کہ اس وقت اردو بلاگرز کو پڑھا جا رہا ہے ، بے شک کچھ لوگ محسوس نہیں کر رہے مگر انکے خیالات اور افکار سب کے سامنے موجود ہیں  ۔ ۔  میں زکریا کے خیال سے متفق ہوں کہ اردو میں بلاگنگ اضافے کی طرف گامزن ہے ، میرے خیال میں اردو سیارہ کی طرح اور بھی اردو بلاگنگ پورٹل ہونے چاہییں۔
دوسری بات جس پر شاید بہت کچھ لکھا گیا ہے ، وہ پاکستان کے حالات ہیں ، بے نظیر کا قتل ہو یا سیاستدانوں کی چالبازیاں ، آٹے بجلی اور گیس کا بحران ہو یا
غریب عوام کے بے چارگیاں  ۔ ۔ ۔ کیا لکھیں کیسے لکھیں  ۔ ۔ ۔ بلکے اب تو کچھ لوگ یوں بھی کہتے ہیں کہ کیوں لکھیں  ۔ ۔ ۔ بقول مرتضی برلاس
شاعر ہوں میں قبیلہ مردہ ضمیر کا
کس کام کی یہ جرات اظہار رہ گئی
اور پھر قوم وہ بھی ہماری قوم
 
جس شاخ پہ بیٹھیے ہوں اسی شاخ کو کاٹیں
ہم لوگ ہی خود اپنی تباہی کا سبب ہیں
 
مگر کیا کریں ہم لوگ جو لکھتے ہیں جو زندہ ہیں مرنے والوں کے ساتھ مر نہیں گئے  ۔ ۔ ۔ ہمارے احساس کبھی بھی ہمیں چپ رہنے نہیں دیتے  ۔ ۔ ۔ ۔
 
ہم فنکار ہیں مقابر کے مورخ تو نہیں
ہم کو ہوتا ہے جو محسوس وہ کیونکر نہ کہیں
 
اس جمعرات کو دبئی میں ایک مشاعرہ ہوا ، دبئی کے نامور شعراء نے شرکت کی ، کچھ دوستوں کے ساتھ گپ شپ بھی رہی ، بات وہیں آئی درد کی  ۔ ۔ ۔ سب نے مانا کہ ہم سب کسی نہ کسی طور پر بے حس ہیں اور اس بے حسی کی وجہ ہے ، نشہ ، ہمیں نشہ ہے طاقت کا حکومت کا دولت کا ،اور شاید ہماری واحد قوم ہے ، جسے نشہ ہے غربت کا ، ہم اپنے آپ کو نوچتے ہیں  ۔ ۔ کاٹتے ہیں بھنبھوڑتے ہیں اور ساتھ یہ بھی کہتے ہیں  ۔ ۔۔
 
یارومجھے بدمست نہ سمجھو کہ میں اکثر
جو بات پتے کی ہو وہ کہتا ہوں نشے میں  ۔ ۔ ۔
اب اور کیا کہوں  ۔ ۔ ۔ ہمارے پاس سب کچھ مگر
اک نوح نہیں جو ہمیں کشتی پہ بٹھا لے
ورنہ کسی طوفان کے آثار بہت ہیں  ۔ ۔ ۔ ۔
Advertisements

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: