اردو کی درمیانی کتاب – 2 – مذہب اور اخلاقیات

مذہب کسی بات پر ایمان رکھنے کو کہتے ہیں ، ایمان کا مطلب ہوتا ہے ماننا ، لوگ مختلف طریقوں سے ماننے کو مانتے ہیں کچھ لوگ ماننے کو مانتے نہیں ، ایسے لوگوں کو ملحد اور لامذہبی اور ناستک وغیرہ کہا جاتا ہے ، دنیا میں بہت سارے لوگ جو ماننے کو نہیں مانتے پائے جاتے ہیں مگر زیادہ لوگ وہ ہیں جو ماننے کو مانتے ہیں اور اسی ماننے کو مذہب کہتے ہیں
دنیا میں بہت سارے مذاہب میں مگر مشہور چند ایک ہی ہیں باقی سب اخلاقیات کہلاتے ہیں  اسلئے بنیادی طور پر مذاہب کو دو طرح میں تقسیم کیا جا سکتا ہے ، ایک خدا پرست مذاہب ایک بنا خدا کے مذاہب ،  خدا پرست چار مشہور مذاہب یہ ہیں
 
عیسائیت – یہ وہ لوگ ہیں جو مسیح کو خدا کا بیٹا مانتے ہیں ، اور اسکی وجہ سے خود کو بھی خدا کی اولاد سمجھتے ہیں ، انکے خیال میں کیونکہ مسیح (ع) نے خود کو مصلوب کروا کر ساری دنیا کے گناہ اپنے سر پر لے لئے ، اسلئے جنت میں جانا کنفرم ہے ، آج کل اسی بات کو مدنظر رکھ کر بہت سارے لوگ  دنیا کو گناہوں سے پاک کر رہے ہیں ،  عیسائیت دنیا کا سب سے بڑا مذہب ہے
 
اسلام – اسلام کو ماننے والے پہلے مسلمان کہلاتے تھے ، اب دھشت گرد کہلاتے ہیں ، اسلام کو سلامتی کا مذہب کہا جاتا ہے ، مگر اس کے ماننے والوں کو اپنی سلامتی کی بہت فکر رہتی ہے ، اسلام سادگی کا درس دیتا ہے اسلئے اسکے ماننے والوں کو سادہ رہنا پڑتا ہے ، یہ لوگ نہ جھوٹ بولتے ہیں نہ کسی کا دل دکھاتے ہیں ، اور آپس میں بھائیوں کی طرح رہتے ہیں ، دنیا بھر کے مسلمان خود کو ایک امت سمجھتے ہیں ، مگر “انتظامی معملات“ کے لئے اپنے اپنے ملکوں میں ایک دوسرے کے لئے پابند ویزے کا نظام رکھتے ہیں ، تاکہ مسلمان دنیا بھر میں پھیلیں کسی ایک جگہ نہ رہیں  ۔ ۔ چونکہ مسلمانوں میں خاندانی منصوبہ بندی کو جائز نہیں سمجھا جاتا اسلئے پیدائش اور اموات کا تناسب برقرار رکھنے کے لئے ، جنگوں اور فسادات کا سہارا لیا جاتا ہے جسے کچھ ناسمجھ لوگ فرقہ واریت سمجھتے ہیں ، اسلام اس وقت دنیا کا تیزی سے پھیلتا مذہب ہے ، اور دنیا کا دوسرا بڑا مذہب ہے
 
بدھ مت – گوتم بدھ کی تعلیمات سے متاثر یہ مذہب ، جہاں پیدا ہوا تھا وہاں نہیں ہے ، زیادہ تر مشرقی ایشاء اور تقریباَ تمام چپٹے ناک والے ملکوں میں پایا جاتا ہے ، گوتم بدھ گو کہ ہندوستان سے تھے مگر انکے ماننے والے زیادہ تر ہندوستانی نہیں ہیں ، یہ مذہب بہت زیادہ شانتی کی تعلیم دیتا ہے ، اس مذہب نے دنیا کو یوگا جیسی تعلیم دی ، اور جسکی وجہ سے لوگ آج بہت زیادہ صحت مندی کی طرف جاتے ہیں ، اس مذہب میں مراقبے کو بہت اہمیت حاصل ہے اسلئے جب چاہتے ہیں مراقبہ کر لیتے ہیں  ۔ ۔  چین جو دنیا کی سب سے بڑی آبادی ہے اس میں اس مذہب کا بہت زور ہے اسلئے اس دنیا میں اس کا نمبر تیسرا ہے  ۔ ۔
 
ہندو دھرم – دریائے سندھ کے کنارے پیدا ہونے والے اس نظام کو پہلے لوگوں نے زندگی گذارنے کے لئے استعمال کیا پھر اسے ایک مذہب بنا دیا ، اس مذہب میں ہر چیز کی پوجا کی جا سکتی ہے ، وہ چڑھتے سورج کی ہو یا پھر تلسی کے پودے کی ، وہ کسی دیوتا کی ہو یا پھر کسی جانور کی  ۔ ۔ ۔ ہر چیز کو بھگوان مانا جا سکتا ہے ، اسلئے یہ مذہب بہت آسان ہے ، اس میں ہر قسم کے تہوار پائے جاتے ہیں ، جنم سے لیکر مرن تک ، اور پانی سے لیکر ہوا تک ، ہر قسم کے تہوار ہوتے ہیں ، جو زندگی کو مزے سے گذارنے میں مدد دیتے ہیں ، یہ مذہب دنیا کی سب سے بڑی جمہوریہ میں بہت زیادہ موجود ہے اور اسلئے ایک بڑا مذہب ہے
انکے علاوہ چند اور مذاہب اپنی پہچان دنیا میں رکھتے ہیں ، جیسے یہودیت ، یہ مذہب الہامی مذاہب کا پرانا ترین ورژن ہے ، اسکے ماننے والے خود کو اسرائیلی بھی کہتے ہیں ، دنیا بھر کی دولت پر انکا قبضہ ہے اسلئے تعداد میں کم ہونے کے باوجود یہ دنیا پر اثر رکھتے ہیں
سکھ مذہب اپنی مخصوص پہچان رکھتا ہے جو مردوں کے سر پر باندھے ہوئے بالوں کی پگڑی ہوتی ہے ، یہ بہت شریف لوگ ہوتے ہیں ، مگر بہادر بھی اسلئے اپنے ساتھ ایک ہتھیار “کرپان“ ضرور رکھتے ہیں ہیں، اسکے علاوہ انکی داڑھی سے اکثر لوگ انپر مسلم ہونے کا دھوکا بھی کھاتے ہیں ، انہیں کچھ بے وقوف لوگ بےوقوف سمجھتے ہیں ، مگر یہ ایک بہت بہادر اور نیک دل قوم ہیں اور انکی اپنی الگ پہچان ہے
ان سب کے علاوہ ایسے لوگ بھی دنیا میں پائے جاتے ہیں جو کسی مذہب کو نہیں مانتے ، صرف انسانیت پر یقین رکھتے ہیں اگر ہو سکے تو ، ورنہ زندگی کو وہ اپنی مرضی سے گذارتے ہیں  ۔ ۔
مذاہب کے بارے میں زیادہ باتیں نہیں کرنی چاہیں کیونکہ لوگ اس میں بہت جلد برا مان جاتے ہیں ، اسلئے لوگ زیادہ تر اخلاقیات پر توجہ دیتے ہیں ، جو کہ مذہب اور لامذہبی کے درمیان کا راستہ ہے ، اسکے لئے لوگ ایک دوسرے کو تحمل اور برداشت کا سبق دیتے ہیں اور کہتے ہیں کہ “اپنا عقیدہ بدلو نہیں دوسروں کا چھیڑو نہیں “ یہ ہی بہترین راستہ ہے زندگی کا  ۔ ۔ ۔
Advertisements

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: